Meri Behen Haya Kar

سر سے ردا ہٹا کر
خود کو بنا سجا کر
سڑکوں پر مت چلا کر
میری بہن تو حیا کر

… عورت تو وه هے جو کہ هر
غیر کی نظر سے خود کو بچائے رکهے
جامہ میں اپنے آ کر
میری بہن تو حیا کر
اسلام کا هے کہنا
ایمان میں خلا کا باعث هے تیرا جلوه
مردوں پہ یہ عطا کر
میری بہن تو حیا کر
عظمت وقار عفت پرده کی هے بدولت
پرده هے تیری عزت
عزت کو رکھ بچا کر
میری بہن تو حیا کر
تیری یہ کج ادائی تیری یہ بے حیائی
شوهر سے بے وفائی
شوهر سے تو وفا کر
میری بہن تو حیا کر
هے یہ گناه اکبر دنیائے بد سی بدتر
دوزخ هے تیرا مقدر
دوزخ سے تو ڑرا کر
میری بہن تو حیا کر
پرده میں ره کر جتنی تو چاهے کر ترقی
حائل نہیں هے کوئی
بهائی کی تو سنا کر
میری بہن تو حیا کر

Meri Behen Haya Kar Poem Image

Advertisements

2 thoughts on “Meri Behen Haya Kar

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s